کوئٹہ ،ناصہبی وہابی دہشتگردوں کی فائرنگ شیعہ لیکچرار شہید

Via Scoop.itparachinarvoice

کوئٹہ ،ناصہبی وہابی دہشتگردوں کی فائرنگ شیعہ لیکچرار شہید منگل, 29 نومبر 2011 07:59
کوئٹہ شیعت نیوز کے نمائندے کے مطابق ناصہبی وہابی دہشتگردوں کی فائرنگ فائرنگ سے شیعہ لیکچرار دانش بلتستانی شہید ان کو نوں کیلی کے علاقے میں ناصہبی وہابی دہشتگردوں اس وقت اپنی درندگی کا نشانہ بنایا جب وہ اپنی روزگار پر جا رہے تھےشہید دانش بلوچستان ہونیورسٹی میں کمپیوٹر سائنس کے لیکچرار تھے ،گھات لگائے ناصہبی وہابی دہشتگردوں نے ان کو نشانہ بنایا ۔شہید کو مقامی ہسپتال منتقل کیا ۔ جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے شہید ہوگ
Via urdu.shiitenews.com

حیدر آباد: جلوسِ عزا پر سپاہ صحابہ کے دہشتگردوں کا حملہ

Via Scoop.itparachinarvoice

حیدر آباد: جلوسِ عزا پر سپاہ صحابہ کے دہشتگردوں کا حملہ بدھ, 30 نومبر 2011 10:06
حیدر آباد کے علاقے ہالا ناکا نزر صائمہ پلازہ کے قریب امام حسین کی یاد میں عزاداروں کے جلوس میں یزید زادوں نے حملہ کردیا۔ مزید اطلاعات کے مطابق عزاداری امام حسین کی یاد میں نکالے جانے والا جلوس حیدر آباد کے علاقے ہالا ناکا نزد صائمہ پلازہ سے گزر رہا تھا کہ کالعدم فسادی ٹولہ سپاہ صحابہ کے شرپسندوں نے جلوس عزا میں شامل عزاداروں کے ساتھ بدزبانی کی اور علم پاک کی توہین کی جس کے رد عمل پر پورے حیدر آباد سے شیعہ نوجوان جلوس عزا میں شامل ہوگئے ، حیدر آباد کے شیعہ نوجوانوں نے جلوس کو باعزت طریقے سے منزل مقصود تک پہچایا۔ واضع رہے کہ برا آمد ہونے والا جلوس معروف عزادار مجاہد علی شاہ کی زیر نگرانی بر آمد ہوا تھا۔ برا آمد ہونے والا جلوس عزا حیدر آباد کے قدیمی جلوسوں میں شامل ہے۔
Via urdu.shiitenews.com

حیدر آباد: جلوسِ عزا پر سپاہ صحابہ کے دہشتگردوں کا حملہ

Via Scoop.itparachinarvoice

حیدر آباد: جلوسِ عزا پر سپاہ صحابہ کے دہشتگردوں کا حملہ بدھ, 30 نومبر 2011 10:06
حیدر آباد کے علاقے ہالا ناکا نزر صائمہ پلازہ کے قریب امام حسین کی یاد میں عزاداروں کے جلوس میں یزید زادوں نے حملہ کردیا۔ مزید اطلاعات کے مطابق عزاداری امام حسین کی یاد میں نکالے جانے والا جلوس حیدر آباد کے علاقے ہالا ناکا نزد صائمہ پلازہ سے گزر رہا تھا کہ کالعدم فسادی ٹولہ سپاہ صحابہ کے شرپسندوں نے جلوس عزا میں شامل عزاداروں کے ساتھ بدزبانی کی اور علم پاک کی توہین کی جس کے رد عمل پر پورے حیدر آباد سے شیعہ نوجوان جلوس عزا میں شامل ہوگئے ، حیدر آباد کے شیعہ نوجوانوں نے جلوس کو باعزت طریقے سے منزل مقصود تک پہچایا۔ واضع رہے کہ برا آمد ہونے والا جلوس معروف عزادار مجاہد علی شاہ کی زیر نگرانی بر آمد ہوا تھا۔ برا آمد ہونے والا جلوس عزا حیدر آباد کے قدیمی جلوسوں میں شامل ہے۔
Via urdu.shiitenews.com

سانحہ نمائش :ناصبی وہابی دہشت گردوں کا فیصل رضا عابدی کے خلاف تحقیقات کرانے کا مطالبہ

Via Scoop.itparachinarvoice

سانحہ نمائش :ناصبی وہابی دہشت گردوں کا فیصل رضا عابدی کے خلاف تحقیقات کرانے کا مطالبہ بدھ, 30 نومبر 2011 13:58
کالعدم دہشت گرد گروہوں سپاہ صحابہ اور لشکر جھنگوی کے ناصبی وہابی دہشت گردوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ سانحہ نمائش کے حوالے سے معروف سیاست دان فیصل رضا عابدی کو بھی شامل تشویش کیا جائے۔شیعت نیوز کے نمائندے کی رپورٹ کے مطابق کالعدم دہشت گرد گروہ سپاہ صحابہ اور لشکر جھنگوی کے ناصبی وہابی دہشتگردوں نے سانحہ نمائش میں فیصل رضا عابدی کو بھی شامل تشویش کرنے کا مطالبہ کیاہے کیونکہ فیصل رضا عابدی شیعہ ہیں اور معروف سیاستدان ہونے کے ساتھ ساتھ پاکستان پیپلز پارٹی کے صدر اور صدر پاکستان کے سیاسی مشیر بھی ہیں تاہم ریاستی انتظامیہ میں موجود کالعدم دہشت گرد گروہوں سپاہ صحابہ اور لشکر جھنگوی کے سر پرست یہ نہیں چاہتے کہ کوئی شیعہ کسی بڑے عہدے پر رہے جس کے نتیجہ میں ناصبی وہابی دہشت گردوں نے فتنہ انگیز حرکتیں شروع کر دی ہیں۔ واضح رہے کہ فیصل رضا عابدی یکم محرم کے روز کراچی میں موجود نہیں تھے جس دن کالعدم دہشت گرد گروہ سپاہ صحابہ اور لشکر جھنگوی کے ناصبی وہابی دہشت گردوں نے نمائش چورنگی پر فائرنگ کر ک ے دو شیعہ اسکاؤٹس کو شہید کر دیا تھا۔ منگل کے روز کالعدم دہشت گرد گروہ سپاہ صحابہ کے سرغنہ ناصبی وہابی دہشت گرد اورنگزیب فاروقی نے مسجد صدیق اکبر (دہشت گردوں کی آماجگاہ) پر ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کالعدم دہشت گرد گروہ سپاہ صحابہ جمعہ کے روز نمائش چورنگی پر احتجاجی مظاہرہ کرے گی اور حالات کی ذمہ داری حکومت پر عائد ہو گی ،ملعون ناصبی دہشت گرد اورنگزیب فاروقی کاکہنا تھا کہ حکومت ہمارے ناصبی دہشت گردوں کو گرفتار کرنا بند کرے۔ ناصبی دہشت گرد نے الزام عائد کیا کہ کالعدم دہشت گرد گروہ سپاہ صحابہ اور لشکر جھنگوی کے ناصبی وہابی دہشت گردوں کی یکم محرم کو نکالی گئی ریلی پر امن تھی جبکہ اسکاؤٹس نے پہلے حملہ کیا تھا۔امریکی وصیہونی ایجنٹ ناصبی دہشت گرد اورنگزیب فاروقی نے پاکستان پیپلز پارٹی کو بھی متنبہ کیا کہ پی پی پی کے کئی اراکین ہماری مدد سے ہی پارلیمنٹ میں پہنچے ہیں۔ قابل ذکر ہے یہ بات کہ کالعدم دہشت گرد گروہ سپاہ صحابہ اور لشکر جھنگوی نے بغیر کسی اجازت نامہ کے یکم محرم الحرام کو یوم عمر ریلی نکالی تھی جبکہ سی سی ٹی وی فوٹیج جو شیعت نیوز نے جاری کر دی ہیں کے مطابق کالعدم دہشت گرد گروہوں سپاہ صحابہ اور لشکر جھنگوی کے ناصبی وہابی دہشت گردوں نے نہتے اسکاؤٹس پر فائرنگ کی اور مجلس عزاء پر حملہ کرنے کی ناپاک سازش کو عملی جامہ پہنانا چاہتے تھے۔ کالعدم دہشت گرد گرہوں سپاہ صحابہ اور لشکر جھنگوی کے ناصبی وہابی دہشت گردوں کی جانب سے ۶ محرم کو احتجاج کرنے کا اعلان کرنا حکومت کی نااہلی اور کمزوری کا منہ بولتا ثبوت ہے ،آخر حکومت ان ناصبی وہابی دہشت گرودں کو گرفتار کیوں نہیں کر رہی جو کہ امریکی وصیہونی ایماء پر ملک میں انارکی پھیلا رہے ہیں۔
Via urdu.shiitenews.com

AL Saud funds terrorist ops in Iran

Via Scoop.itparachinarvoice

The ringleader of the Jundallah terrorist group, Mohammad Zaher Baluch, has reportedly returned to Pakistan from Saudi Arabia, which is known to fund terrorist activities in its neighbors. According to informed sources in Islamabad, Baluch, who replaced Abdolmalek Rigi as Jundallah’s ringleader, travelled to Saudi Arabia to hold talks with Saudi security officials. Rigi was arrested by Iranian intelligence forces in February 2010 and executed in June for 79 counts of crime, including armed robbery, bombing operations and armed attacks on law enforcement and civilians. Rigi stated in his confessions that he had dealings with the US government and was promised unlimited funds and resources for “waging an insurgency” in Iran. Iran’s southeastern province of Sistan-Baluchestan, which borders Afghanistan and Pakistan, has witnessed a rise in terror activities by arms smugglers and Pakistani-based armed terrorist groups such as Jundallah. The Jundallah terrorist group, which operates from Pakistan, has carried out numerous bombings, assassination attempts, and terrorist attacks in Iran. Jundallah’s headquarters is located in the Pakistani city of Quetta, but its members have also been seen in Karachi. According to the report, Saudi Arabia provides financial aid for terrorist groups to carry out bombings in Iran and Iraq.
Via presstv.ir

‭BBC Urdu‬ – ‮پاکستان‬ – ‮کراچی:’فرقہ وارانہ کشیدگی میں اضافہ‘‬

Via Scoop.itparachinarvoice

کراچی:’فرقہ وارانہ کشیدگی میں اضافہ‘ آخری وقت اشاعت: بدھ 30 نومبر 2011 ,‭ 19:42 GMT 00:42 PST FacebookTwitterدوست کو بھیجیںپرنٹ کریں پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں نمائش چورنگی پر فائرنگ میں دو سکاؤٹس کی ہلاکت اور اس کے بعد ہونے والی گرفتاریوں کے باعث شہر میں فرقہ وارانہ کشیدگی میں اضافہ ہو رہا ہے۔ منگل کو اہلسنت فرقے کی جماعتوں کے اجلاس میں جمعہ کی نماز کے بعد نمائش چورنگی پر احتجاجی دھرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔ اسی بارے میں سکاؤٹس کی ہلاکت: درجنوں افراد گرفتارکراچی: فائرنگ سے دو ہلاک، پانچ زخمی متعلقہ عنوانات پاکستان,کراچی اہلسنت و الجماعت کے سیکریٹری اطلاعات اورنگزیب فاروقی نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اعلان کیا کہ اگر اس دھرنے کو روکنے کی کوشش کی گئی تو ملک بھر میں دس محرم تک روزانہ ریلیاں نکالی جائیں گی۔ کراچی سے نامہ نگار ریاض سہیل کے مطابق نمائش چورنگی کے قریب مرکزی امام بارگاہ اور نشتر پارک واقع ہے، جہاں ماہ محرم میں روزانہ مجالس ہوتی ہیں، جن میں اہل تشیع بڑی تعداد میں شریک ہوتے ہیں۔ یکم محرم کو اہلسنت و الجماعت کی ریلی کے اختتام پر نامعلوم افراد کی فائرنگ میں دو سکاؤٹس ہلاک ہوگئے تھے، جس کے بعد پولیس نے شہر بھر سے پچاس سے زائد گرفتاریاں کیں تھیں، جن میں اہلسنت و الجماعت کے رہنماوں کے بھائی اور بیٹے بھی شامل تھے۔ اہلسنت و الجماعت کے سیکریٹری اطلاعات اورنگزیب فاروقی نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ ان کی ریلی پر حملے کی منصوبہ بندی کی گئی تھی، ان کا قتل و غارت گیری سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ مولانا اورنگزیب فاروق کا کہنا تھا کہ فائرنگ سے بچنے کے لیے ان کے کارکن قریبی مسجد باب رحمت میں چلے گئے جہاں سے پولیس نے انہیں نہتا گرفتار کرلیا اور اب انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کرنے کے بیانات دیے جا رہے ہیں۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ اہلسنت والجماعت کے کارکنوں کو رہا کیا جائے، مسجد اور کارکنوں پر حملہ کرنے والوں کے خلاف مقدمہ درج کیا جائے۔ دوسری جانب مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی ترجمان علامہ حسن ظفر نقوی، مولانا مرزا یوسف حسین اور مولانا مختار امامی نے ایک بیان میں نمائش چورنگی واقعے میں ملوث ملزمان اور ان کے سرپرستوں کی گرفتاری کا مطالبہ کیا ہے۔ ان رہنماؤں کا کہنا تھا کہ سی سی ٹی وی فوٹیج سے ثابت ہوتا ہے کہ یکم محرم الحرام کو ملزمان نے نہ صرف اسکاؤٹس پر حملہ کیا بلکہ نشتر پارک کی مرکزی مجلس کو بھی نشانہ بنانے کا منصوبہ رکھتے تھے۔ ان کا کہنا تھا کہ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ وزیر داخلہ سندھ سمیت پولیس اور رینجرز حکام شاید اس انتظار میں ہیں کہ کوئی بڑا واقعہ رونما ہو اسی وجہ سے شہر بھر کی مجالس میں پولیس اور رینجرز کی نفری نہ صرف برائے نام بلکہ ناقص سیکورٹی انتظامات بھی سامنے آ رہے ہیں جس سے درجنوں شکوک و شبہات جنم لے رہے ہیں۔ ان رہنماؤں نے مطالبہ کیا کہ سیکورٹی کے انتظامات کو بہتر بنایا جائے بصورت دیگر حالات کی تمام تر ذمہ داری حکومت پر عائد ہو گی۔ کراچی میں گرفتاریاں دریں اثناء کراچی میں پولیس نے پانچ مبینہ دہشت گردوں کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے اور کہا ہے کہ یہ ملزم محرم میں دہشت گردی کی واردات کا ارادہ رکھتے تھے۔ پولیس نے ملزمان کی شناخت کامران، سالار محمد، فرمان خان، محمد منیر اور امجد خان کے نام سے کی ہے اور ان کا تعلق کالعدم شدت پسند تنظیم جنداللہ سے بتایا ہے۔ ایڈیشنل انسپیکٹر جنرل غلام شبیر شیخ نے منگل کو ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ ملزم قیادت کے حکم پر محرم میں تخریب کاری کے لیے وزیرستان اور اندرون پنجاب سے کراچی پہنچے تھے۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ ملزمان پہلے بھی کراچی میں تخریب کارروایوں میں ملوث رہے ہیں۔’انہوں نے 2009 میں عاشورہ بم دھماکے کے الزام میں گرفتار ساتھیوں کو آزاد کرانے کے لیے سٹی کورٹ پر حملہ بھی کیا تھا، جس میں ایک پولیس اہلکار اور ان کا گرفتار ساتھی مراد شاہ ہلاک ہوگیا تھا جبکہ حملہ آور دیگر ساتھیوں شکیب فاروقی، مرتضیٰ اور وزیر محمد کو لیکر فرار ہوگئے۔‘ انہوں نے بتایا کہ ملزم 2010 میں جناح ہپستال میں موٹر سائیکل میں بم نصب کیا تھا، جس کے پھٹنے سے سولہ افراد ہلاک ہوگئے تھے۔ دوسری جانب نمائش چورنگی پر فائرنگ کے واقعہ میں زخمی ہونے والے تیسرے سکاؤٹ نیئر زیدی بھی ہلاک ہوگئے ہیں، نیئر زیدی مقامی ہپستال میں زیر علاج تھے جہاں منگل کی شام زخموں کی تاب نہ لاکر انتقال کر گئ
Via bbc.co.uk

اسلام ٹائمز – پشاور میں سپاہ صحابہ کی طرف سے امام بارگاہ کی بےحرمتی، حکومت خاموش کیوں؟

Via Scoop.itparachinarvoice

پشاور میں سپاہ صحابہ کی طرف سے امام بارگاہ کی بےحرمتی، حکومت خاموش کیوں؟ اسلام ٹائمز:امام بارگاہ کو حکومت نے پولیس کے کنٹرول میں دیے دیا ہے اور امام بارگاہ کو سیل کر کے ہر قسم کی عزاداری، مجالس اور جلوس کی برآمدگی پر مکمل پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ اسلام ٹائمز۔ پشاور میں 20 نومبر 2011ء کو سبیل امام حسین کے تنازعے پر اہل تشیع اور مقامی تنظیم سپاہ صحابہ کے درمیان کراس فائرنگ کا واقعہ رونما ہوا، جس میں دونوں طرف سے ایک دوسرے پر بے تحاشا فائرنگ کی گئی، جس کے نتجے میں دو افراد ہلاک اور ایک زخمی ہوا۔
بعدازاں سپاہ صحابہ والوں نے ایک جلوس کی شکل میں آ کر پولیس کی موجودگی میں امام بارگاہ دربار امام حسین ع پر قبصہ کر کے مقدس ناموں کی بے حرمتی کی، جس میں حضور پاک کی ایک مشہور حدیث حسین منی وانا من الحسین یعنی حسین مجھ سے ہے اور میں حسین سے ہوں بھی شامل تھی، اس کو بھی سپاہ یزید نے اپنے پاوں تلے روند ڈالا اور امام بارگا ہ کے اندر موجود علم عباس علمدار کو نذر آتش کیا گیا۔ امام بارگاہ پر آتشیں اسلہ سے فائرنگ کی گئی، جس سے امام بارگاہ کا میں گیٹ گولیوں کی بوچھاڑ سے چھلنی کر دیا گیا۔
اب امام بارگاہ کو حکومت نے پولیس کے کنٹرول میں دیے دیا ہے اور امام بارگاہ کو سیل کر کے ہر قسم کی عزاداری، مجالس اور جلوس کی برآمدگی پر مکمل پابندی عائد کر دی گئی ہے۔
Via islamtimes.org